صدور

مسلم کا نفرنس کا قیا م اور منتخب صدور کی تفصیل (1932-2012 )قیام اکتوبر 15/16/17 پتھر مسجد سرینگر
آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس کا قیا م ریاست جموں وکشمیرکی سیاسی زندگی کا ایک اہم واقعہ ہے جس نے مستقبل میں اس خطے کے عوام پر بالعموم اورمسلمانان ریاست جموں وکشمیر کی زندگیوں پر بالخصو ص گہرے اثرات مرتب کیے۔اس خطہ کے عوام کو رسوا زمانہ بیع نامہ امرتسر میں بھیڑ بکریوں کی طرح فروخت کر دیا گیا تھا، مسلم کانفرنس نے اہل کشمیر کے اندر سیاسی بیداری پیداکی اورمسلمانان ریاست نے کئی علاقائی ، گروہی یالسانی ونسلی تعصب سے بالا تر ہو کر مکمل اتفاق واتحاد کے ساتھ آزادی کے سفر کا آغاز کیا ۔
یہ 13 جولائی 1931 ؁ء کے شہیدوں کا اعجاز تھا جس نے مسلمانوں کی فکری ونظریاتی راہنمائی کی اور تین لاکھ کشمیریوں کے تاریخی اجتماع میں ریاست جموں وکشمیر کی اولین نمائندہ جماعت آل جموں وکشمیر کا تاسیسی اجلاس 15،16 ،17 اکتوبر 1932کو پتھر مسجد سرینگر میں انعقاد پذیر ہوا جس کے پہلے صدر شیخ عبداللہ اورسیکرٹری جنر ل چوہدری غلام عباس منتخب ہوئے۔ذیل میں مسلم کانفرنس کے صدور کی تفصیل موجود ہے۔